!جیک ما کی متاثر کن کہانی: محنت رنگ لاتی ہے

جیک ما ایک چینی کاروباری اور انسان دوست ہیں جو دنیا کی سب سے بڑی ٹیکنالوجی کمپنیوں میں سے ایک علی بابا گروپ کے بانی اور ایگزیکٹو چیئرمین کے طور پر مشہور ہیں۔

جیک ما کی کہانی

 

ہانگزو، چین میں 1964 میں پیدا ہوئے،جیک ما کو انٹرنیٹ اور انگریزی میں ابتدائی دلچسپی تھی اور اس نے 10 سال کی عمر میں خود کو زبان سکھانا شروع کیا۔ کالج کے بعد، اس نے مختلف قسم کی نوکریاں کیں اور آخر کار ایک انٹرنیٹ کمپنی شروع کی جو ناکام ہو گئی۔

  جیک ما نے پھر 1999 میں علی بابا کی بنیاد رکھی۔ اس کا ایک وژن تھا کہ چھوٹے کاروباروں کے لیے اپنی مصنوعات کو آن لائن فروخت کرنا آسان بنایا جائے۔ وقف ملازمین کی مدد سے، علی بابا نے ترقی کی اور جلد ہی دنیا کے سب سے بڑے آن لائن بازاروں میں سے ایک بن گیا۔

آج، وہ چین کے امیر ترین لوگوں میں سے ایک ہیں اور ایک عالمی کاروباری رہنما ہیں۔ اس کی کامیابی نے اسے ہر جگہ کاروباری افراد کے لیے ایک رول ماڈل بنا دیا ہے اور دوسرے چینی کاروباریوں کو اپنے خوابوں کو پورا کرنے کی ترغیب دی ہے۔

 جیک ما ایک مخیر شخص بھی ہے، جس نے تعلیم، صحت کی دیکھ بھال، اور ماحولیاتی تحفظ جیسے مقاصد کے لیے اربوں ڈالر عطیہ کیے ہیں۔ وہ چین میں ماحولیاتی تحفظ، خواتین کے حقوق اور ایل جی بی ٹی کے حقوق کے لیے سرگرم وکیل ہیں۔

جیک ما محنت اور لگن کی طاقت کی ایک متاثر کن مثال ہیں۔ اس نے چھوٹے کاروباروں کے لیے اپنی مصنوعات کو آن لائن فروخت کرنا آسان بنانے کا خواب دیکھا اور اسے حقیقت بنانے کے لیے مسلسل کام کیا۔ اس نے اپنے پورے کیریئر میں بہت سے چیلنجوں اور ناکامیوں کا سامنا کیا ہے، لیکن اپنے وژن اور دوسروں کی مدد کرنے کے لیے ان کی غیر متزلزل وابستگی نے اسے دنیا کے کامیاب ترین کاروباری افراد میں سے ایک بننے کے قابل بنایا ہے۔ جیک ما کی کہانی ثابت قدمی اور محنت کی طاقت کا ثبوت ہے، اور ہر جگہ کاروباری افراد کے لیے ایک زندہ مثال  ہے۔

 

تبصرہ کیجئے

Your email address will not be published. Required fields are marked *